birth of Quaid e Azam

نئے پاکستان کہ حکومت بابائے قوم قائد اعظم کے یوم ولادت پر سرکاری تقاریب کا انعقاد کرنا ہی بھول گئی

لاہور (سحر نیوز) : نیا پاکستان بننے سے ملک میں کئی مثبت تبدیلیاں دیکھنے میں آئیں جنہیں عوام کی جانب سے بھی خوب سراہا گیا۔ لیکن نئے پاکستان کی حکومت بابائے قوم قائد اعظم محمد علی جناح کا یوم ولادت (birth of Quaid e Azam) ہی منانا بھول گئی۔ نئے پاکستان کی حکومت نے بابائے قوم اور بانی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح کے یوم ولادت کا کسی سرکاری تقریب کا انعقاد نہیں کیا۔
قائد اعظم کے یوم ولادت پر حکومتی رہنماؤں نے صرف بیانات دینے پر ہی اکتفا کیا، گورنر ہاؤس اور وزیراعلیٰ ہاؤس سمیت کسی سرکاری دفتر میں قائد اعظم محمد علی جناح کے یوم پیدائش (birth of Quaid e Azam) کے حوالے سے کسی تقریب کا انعقاد نہیں کیا گیا۔ اس معاملے پر موجودہ حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا گیا۔ سوشل میڈیا صارفین کا کہنا تھا کہ حکومت نے اپنے سو روز مکمل ہونے پر تو بڑی دھوم دھام سے تقریب کا انعقاد کیا اور چکاچوند تقریب منعقد کی لیکن بانی پاکستان کے یوم ولادت پر کسی سرکاری تقریب کا انعقاد کرنا تو دور ، حکومت نے ایک کیک تک نہیں کاٹا جو کہ نہایت افسوسناک ہے۔

یہ بھی پڑھیں. حمزہ علی عباسی نے علی رضا عابدی کے قتل کی ذمہ داری الطاف حسین پر ڈال دی

سرکاری سطح پر تو ایک طرف پاکستان تحریک انصاف نے پارٹی کی سطح پر کسی تقریب کا انعقاد نہیں کیا۔ پاکستان تحریک انصاف جو بانی پاکستان کے افکار پر چلنے کی بات کرتی ہے ، نے بھی کسی تقریب کا انعقاد نہیں کیا جو افسوسناک ہے۔واضح رہے کہ گذشتہ روز قائداعظم محمد علی جناحؒ کے یوم ولادت کے موقع پر مزار قائد پر گارڈ کی تبدیلی کی پُروقار تقریب منعقد کی گئی تھی۔
پاکستان ملٹری اکیڈمی کاکول کے چاک و چوبند دستے نے سلامی پیش کی,تقریب سماجی وسیاسی شخصیات کے علاوہ افواج پاکستان کے اعلیٰ افسران نےشرکت کی۔ بابائے قوم قائداعظم محمد علی جناح کےیوم پیدائش (birth of Quaid e Azam) پرحکومت پاکستان کی جانب سے بھی ایک ٹویٹر پیغام میں انہیں خراج تحسین پیش کیا گیا۔

لیکن پنجاب حکومت کی جانب سے اس حوالے سے نہ تو کوئی تقریب منعقد کی گئی نہ ہی کیک تک کاٹا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں