Asif Ali Zardari

آصف زرداری کے جیل جانے کی صورت میں پیپلز پارٹی کیا کرے گی؟

لاہور(سحر نیوز) :سیاسی مبصرین کے مطابق ایسا لگا رہا ہے کہ آنے والے دنوں میں پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چئرمین آصف علی زرداری (Asif Ali Zardari) گرفتار ہو جائیں گے لیکن سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ آصف زرداری (Asif Ali Zardari) کے جیل جانے کی صورت میں پیپلز پارٹی کیا کرے گی۔اسی حوالے سے تجزیہ پیش کرتے ہوئے معروف صحافی سہیل وڑائچ کا کہنا تھا کہ آصف زرداری کی گرفتاری کے بعد پیپلز پارٹی بہت نپا تلا رد عمل دے گی۔
کیونکہ اگر ہیڈ ڈاؤن جاتے ہیں تو پھر سندھ حکومت کو خطرہ ہو گا اور پھر وفاق یہ کہے گا کہ سندھ حکومت اور مظاہرین ملے ہوئے ہیں۔دوسری طرف آصف زرداری کے ذہن کو پڑھا جائے تو وہ یہ کہتے ہیں کہ جو بھی ڈیل ہو گی وہ ڈیل اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ ہوگی۔اگر آصف زرداری لڑیں گے بھی تو اس بات پر کہ میرے ساتھ ڈیل کی جائے اور اگر ناراض ہوں گے تو وہ اس بات پر کہ میرے ساتھ ڈیل کیوں نہیں کرتے۔

یہ بھی پڑھیں. جعلی اکاؤنٹس کیس:172مزیدنام ای سی ایل میں ڈالنے کا فیصلہ

اس لیے آصف زرداری (Asif Ali Zardari) ڈیل کے لیے دباؤ ڈالیں گے۔۔خیال رہے حکومت پاکستان نے جعلی بینک اکاؤنٹس پر بنائی گئی جے آئی ٹی رپورٹ میں شامل 172 افراد کی فہرست جاری کر دی ہے۔ حکومت نے جے آئی ٹی رپورٹ میں شامل 172 افراد کے ناموں کو ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) میں شامل کر دیا ہے۔ ای سی ایل کی فہرست میں پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین آصف علی زرداری، پاکستان پیپلز پارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو زرداری اور آصف علی زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپورکے نام بھی شامل ہیں۔
فہرست میں پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین آصف علی زرداری (Asif Ali Zardari) کا 24 واں نمبر ہے جبکہ فریال تالپور کا نام فہرست میں 36 ویں نمبر پر ہے۔ اس فہرست میں ان کے علاوہ سابق وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ ،موجودہ وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ،سندھ بینک کے چیئرمین بلال شیخ،نمر مجید، سہیل انورسیال،ملک ریاض، اومنی گروپ کے عبد الغنی مجید، اور حسن لوائی کا نام بھی شامل ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں