Bilawal Bhutto

وزیراعلیٰ سندھ اور بلاول بھٹو کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا عندیہ

اسلام آباد (سحر نیوز) وفاقی حکومت نے وزیراعلیٰ سندھ اور بلاول بھٹو (Bilawal Bhutto) کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا عندیہ دے دیا، حکومت نے سیاسی درجہ حرارت کم کرنے پربھی غور شروع کردیا ہے،وزیراعظم کی ہدایت پرفواد چودھری نے دورہ سندھ منسوخ کردیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت پارٹی کے سینئر رہنماؤں کامشاورتی اجلاس ہوا۔
جس میں ملک کی کشیدہ سیاسی صورتحال پر مشاورت کی گئی۔وزیراعظم عمران خان نے ملک میں پیپلزپارٹی کی سندھ حکومت کے گرانے کے حوالے سے حکمت عملی تبدیل کرنے کی ہدایت کردی ہے۔بتایا گیا ہے کہ عمران خان کی ہدایت پر وفاقی وزیراطلاعات فواد چودھری نے اپنا دورہ سندھ منسوخ کردیا ہے۔وزیراعظم کی زیرصدارت مشاورتی اجلاس میں حکومت نے سیاسی درجہ حرات کم کرنے پر غورشروع کردیا ہے۔

جس کے تحت وفاقی حکومت نے وزیراعلیٰ سندھ اور چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو (Bilawal Bhutto) کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا عندیہ بھی دے دیا ہے۔دوسری جانب پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آصف زرداری صاحب اگر اجازت دیں تو ایک ہفتے میں وفاقی حکومت گرا سکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ان کو حساب بھی نہیں آتا۔ان لوگوں کو ریاضی کا کچھ معلوم نہیں میرے پاس 99سیٹیں ہیں۔

یہ بھی پڑھیں. سندھ کے اندر فارورڈ بلاک بن رہا ہے، فیصل واوڈا
اگر ان کوسندھ حکومت گرانی ہے توانہیں50فیصد سے زائد ووٹ چاہئیں۔تاہم سندھ حکومت گرانے کا تحریک انصاف کا خواب کبھی پورا نہیں ہوگا۔بلاول نے کہا کہ جے آئی ٹی رپورٹ بہانہ ہے اصل میں سندھ نشانہ ہے۔جے آئی رپورٹ جعلی ہے ، اس سازش کو بے نقاب کریں گے۔بلاول بھٹو نے کہا کہ آصف زرداری پہلے بھی تمام کیسز میں باعزت بری ہوئے اب بھی سرخرو ہوں گے۔
اسی طرح آج سپریم کورٹ میں جعلی اکاؤنٹس کے ذریعے منی لانڈرنگ کے ازخود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس میں کہا کہ 172 افراد کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کے سارے معاملے پر حیرت ہوئی کہ کیسے نام ای سی ایل میں ڈالے گئے اور وفاقی حکومت اس کی کیسے وضاحت دے گی۔چیف جسٹس نے کہا کہ ہم نے جواب گزاروں کو جے آئی ٹی رپورٹ پر جواب داخل کرنے کا کہا اور حکومت نے ان کے نام ای سی ایل میں ڈال دئیے۔چیف جسٹس نے کہا کہ جے آئی ٹی نے ایک چٹھی لکھ دی تو کسی نے اس پر ذہن استعمال نہیں کیا، جے آئی ٹی کوئی صحیفہ آسمانی نہیں، گورنر راج لگا تو اس آئین کے تحت لگے گا اور کسی نے گورنر راج لگایا تو اسے اڑانے میں ایک منٹ لگے گا۔ (Bilawal Bhutto)

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں