occupied Kashmir

فواد چوہدری نے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی پھٹ پڑے

اسلام آباد (سحر نیوز) وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری (Fawad Chaudhary) نے مقبوضہ کشمیر (occupied Kashmir) میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی پر ٹویٹ کیا ہے۔ان کا اپنے ٹویٹر پیغام میں کہنا تھا کہ بھارت کو میں نہ مانوں کی ضد چھوڑنی ہو گی۔ظلم جب حد سے بڑھتا ہے تو مٹ جاتا ہے۔مقبوضہ کشمیر (occupied Kashmir) انسانی حقوق کے حوالے سے المیہ بن چکا ہے۔بھارت کو سیاست اور حدود سے ہٹ کر انسانیت کے لیے سوچنا ہو گا۔

واضح رہے کشمیر میں بھارتی فورسز کی جانب سے ڈھائے جانے والے مظالم کے خلاف دنیا بھر سے آوازیں بلند کی جاتی ہیں۔لیکن کشمیری ابھی بھی ‘ کشمیر بنے گا پاکستان’ کا نعرہ لگاتے ہیں۔یہاں تک کہ بھارت کے سابق وزیر خزانہ نے کشمیر کھو دینے کا اعتراف کر لیا۔سابق وزیر خزانہ نےمقبوضہ کشمیر میں مودی سرکاری کی ناکامیوں کا پردہ فاش کر دیا۔

یشونت سنہا کا کہنا ہے کہ ہم نے کشمیر میں ایک کے بعد ایک غلطی کی۔بھارتی حکومت نے وحشیانہ طاقت کے استعمال کا ریاست نظریہ اپنایا ہوا ہے۔ کولگام میں فورسز کے ہاتھوں درجنوں کشمیریوں کا قتل ہمارے سامنے ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ کشمیریوں کو اب ہم پر اعتماد نہیں رہا۔ سابق بھارتی وزیر خزانہ نے اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ ہم مقبوضہ کشمیر کھو چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں. وزیراعلیٰ سندھ اور بلاول بھٹو کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا عندیہ

جب کہ دوسری جانب مقبوضہ کشمیر (occupied Kashmir) میں بھارتی فوج نفسیاتی دباؤ کا شکار ہورہی ہے۔ گزشتہ دس سال سے مقبوضہ کشمیر میں تعینات فوجیوں میں خود کشی کا رحجان بڑھ رہا ہے۔ اگرچہ بھارتی حکومت اور محکمہ دفاع نے ان واقعات کو روکنے کیلئے کئی طرح کے اقدامات بھی اٹھا ئے تھے مگر یہ سلسلہ بدستور جاری ہے۔ جبری ڈیوٹیوں سے تنگ آئے بھارتی فوجیوں کی خودکشیوں کے رجحان میں دن بہ دن اضافہ ہو رہا ہے۔ مقبوضہ کشمیرمیں ایک اور فوجی نے اپنے آپ کو گولی مار کر زندگی کا خاتمہ کرلیا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں