fake bank accounts

جعلی بنک اکاؤنٹس کیس میں سپریم کورٹ کا بڑا حکم

اسلام آباد (سحر نیوز) جعلی بنک اکاؤنٹس (fake bank accounts) اور منی لانڈرنگ کیس میں سپریم کورٹ آف پاکستان نے چئیرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرادری کو کلین چٹ دے دی۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں جعلی بنک اکاؤنٹس (fake bank accounts) کیس کی سماعت ہوئی۔دوران سماعت چیف جسٹس سے استفسار کیا کہ بلاول بھٹو وزرداری کو جے آئی ٹی نے کیوں ملوث کیا؟۔

یہ بھی پڑھیں.آرمی چیف کا مولانا طارق جمیل سے ٹیلی فونک رابطہ

بلاول بھٹو معصوم ہے انہوں نے پاکستان آ کر کیا کیا؟۔چیف جسٹس نے کہا کہ بلاول بھٹو توپاکستان آکر اپنی ماں کی وراثت کو آگے بڑھا رہا ہے اس کو کاروبار کا کیا علم ہے۔جسٹس فیصل عرب نے استفسار کیا کہ بلاول بھٹو کا اپنا کوئی کردار ہے؟۔چیف جسٹس نے ریمارکس میں کہا کہ کوئی کردار نہیں انہوں نے یہ بھی پوچھا کہ جے آئی ٹی نے بدنام کرنے یا کسی اور کے حکم پر بلاول بھٹو کا نام ڈالا ہے۔

چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ جے آئی ٹی نے بلاول بھٹو اور مراد علی شاہ کے نام کیوں ای سی ایل میں ڈالے۔اس پر جے آئی ٹی کے وکیل نے جواب دیاکہ میں اس پر عدالت کو مطمئن کروں گا۔چیف جسٹس نے کہا کہ جے آئی ٹی نے تو وزیر اعلیٰ کا نام بھی ای سی ایل میں ڈال دیا تھا۔انہوں نے استفسار کیا کہ بلاول بھٹو کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم کس نے دیا تھا؟۔
چیف جسٹس نے چئیرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری کا نام ای سی ایل کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دے دیا ۔عدالت نے بلاول بھٹو کا نام جے آئی ٹی رپورٹ سے ختم کرنے کا بھی حکم دے دیا۔ جے آئی ٹی رپورٹ کا وہ حصہ ڈیلیٹ کریں جس میں بلاول بھٹو کا نام ہے۔چیف جسٹس نے مراد علی شاہ کا نام بھی ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دے دیا۔چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ وزیر اعلیٰ سندھ کا استحصال نہیں کریں گے۔چیف جسٹس نے کہا کہ جہاں مراد علی شاہ کا نام آئے وہاں ان کا موقف معلوم کیا جائے . (fake bank accounts)

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں