شاہد خاقان عباسی کے بعد نیب( National Accountability Bureau NAB) کا مزید دو افراد کو گرفتار کرنے کا فیصلہ

NAB National Accountability Bureau

مفتاح اسماعیل اور عمران الحق کے وارنٹ گرفتاری جاری کر دئے گئے

لاہور ( تازہ ترین اخبار۔ 18 جولائی 2019ء) : احتساب بیورو (نیب) نے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کے
بعد اب دو مزید افراد کو گرفتار کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق نیب نے سابق وزیر خزانہ
مفتاح اسماعیل اور سابق ایم ڈی پی ایس او عمران الحق کو بھی گرفتار کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔
جس کے تحت نیب( National Accountability Bureau NAB) کی جانب سے دونوں رہنماؤن کے وارنٹ گرفتاری بھی جاری کر دئے گئے ہیں۔

نیب کی ٹیم مفتاح اسماعیل اور عمران الحق کی گرفتاری کے لیے کارروائی کرے گی۔
یاد رہے کہ اب سے کچھ دیر قبل نیب ( National Accountability Bureau NAB)نے سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو بھی گرفتار کیا تھا۔
شاہد خاقان عباسی کا ریمانڈ حاصل کرنے کے بعد انہیں نیب راولپنڈی منتقل کیا جائے گا۔
سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو لاہور کے ٹول پلازہ سے گرفتار کر لیا گیا ۔

سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی (shahid khaqan abbasi)کو گرفتار کر لیا گیا

نیب نے آج سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کو طلب کر رکھا تھا لیکن انہوں نے نیب کے
سامنے پیش ہونے سے معذرت کر لی تھی۔

نیب ( National Accountability Bureau NAB)راولپنڈی نے شاہد خاقان عباسی کو ایل این
جی ٹرمینل کا غیر قانونی ٹھیکہ دینے کے الزام میں تفتیش کے لیے طلب کیا تھا
اور سابق وزیراعظم کو صبح 10 بجے نیب راولپنڈی میں پیش ہونے کی ہدایت کی گئی تھی لیکن وہ پیش نہیں ہوئے۔
واضح رہے کہ گذشتہ سال چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں
سابق وزرائے اعظم نواز شریف اور شاہد خاقان عباسی کے خلاف بدعنوانی اور اختیارات کے ناجائز

استعمال کے الزامات کی تحقیقات کی منظوری دی گئی تھی۔
نیب ( National Accountability Bureau NAB)کے مطابق شاہد خاقان عباسی کے خلاف
ایل این جی ٹرمینل کا ٹھیکہ قواعد و ضوابط کے
خلاف دینے کے الزام میں تحقیقات کا آغاز کیا گیا۔ سابق وزیراعظم شاہد خاقان نے من پسند کمپنی
کو 15 سال کا ٹھیکہ خلاف ضابطہ دیا جس سے قومی خزانے کو مبینہ طور پر اربوں روپے کا نقصان پہنچا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں