علی ظفر(ali zafar) کو 200 کروڑ روپے ہرجانہ ادا کرنے کا حکم

ali zafar

میشا شفیع نے علی ظفر(ali zafar)کے درمیان عدالتی جنگ عروج پر
دونوں احباب پیشی پر آنے ا ور جانے کے بعد میڈیا میں گفتگو کرتے اور نمبر سمیٹ کر چلتے
بنتے ہیں۔آپ بے قوفی کی انتہا ملاحظہ فرمائیں کہ ابھی علی ظفر(ali zafar) کے کیس کا فیصلہ نہیں ہوا کہ
اسے لاکھوں روپے کا ہرجانہ دلوایا جائے تو میشا شفیع نے بھی اربوں روپے ہرجانے کی صورت
میں وصول کرنے کے لیے علی ظفر کے خلاف مقدمہ دائر کردیا۔

سوچنے کی بات ہے کہ جب علی ظفر(ali zafar) کو آپ کی طرف سے کچھ نہیں مل سکاتو آپ کو کیسے مل جائے گا۔

پاکستان فلم انڈسٹری کے معروف اداکار یوسف خان(Yusuf Khan) کی 10ویں برسی 20 ستمر کو منائی جائے گی

اگر کچھ ملے گا تو دونوں کو سستی شہرت، اس کے علاوہ تو عدالتوں کے دھکے ہی ہیں جو دونوں
حضرات خود نہیں کھائیں گے تو اپنے وکلا کو ضرور کھلائیں گے۔گلوکارہ میشا شفیع اور علی ظفر
کے درمیان عدالتی جنگ شدت اختیار کرگئی۔ میشا شفیع نے علی ظفر پر 200 کروڑ روپے ہرجانے
کا دعویٰ دائر کر دیا۔گلوکارہ میشا شفیع نے درخواست میں موف اختیار کیا کہ علی ظفر نے میڈیا پر
میرے خلاف جھوٹے الزامات لگائے، ادکار علی ظفر کے جھوٹے الزامات سے شہرت کو نقصان پہنچا،
علی ظفر نے کہا کہ میشا نے کینڈین نیشنیلٹی حاصل کرنے کے لیے جھوٹا الزام عائد کیا۔

درخواست میں مزید کہا گیا کہ علی ظفر(ali zafar) نے میڈیا پر بیان دیا کہ میں ایک شریف شہری ہوں اور
میشا شفیع جھوٹی خاتون ہے، الزام لگایا کہ میں قانون اور عدالت کا احترام کرتا ہوں میشا شفیع
قانون اور عدالت کو نہیں مان رہی، علی ظفر نے کہا کہ میشا شفیع نے پیسوں اور لالچ میں آکر
جنسی ہراساں کرنے کا جھوٹا الزام عائد کیا ہے، عدالت سے استدعا ہے کہ علی ظفر کو 200
کروڑ روپے ہرجانہ ادا کرنے کا حکم دے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں