کراچی کے علاقے ناظم آباد، میں پولیس اہلکار ذیشان(zeeshan) شہید، جبکہ 2 ڈاکو ہلاک

zeeshan

کراچی کے علاقے ناظم آباد میں عید گاہ گراؤنڈ کے قریب پولیس مقابلے میں دو ڈاکو ہلاک
اور ایک پولیس اہلکار شہید ہوگیا۔ ناظم آباد پولیس کے مطابق گشت پر مامور اہلکاروں نے
دو موٹر سائیکل پر سوار تین افراد کو رُکنے کا اشارہ کیا لیکن انہوں نے رکے بغیر اہلکاروں
پر فائرنگ کردی۔ پولیس حکام نے بتایا کہ فائرنگ کے تبادلے میں دو ملزمان ہلاک ہوگئے
جب کہ ایک اہلکار شہید ہوگیا۔

ایس ایس پی سینٹرل عارف اسلم راؤ نے میڈیا سے گفتگو کرتے
ہوئے بتایا کہ شہید اہلکار ذیشان(zeeshan) 2014 میں بھرتی ہوا تھا جو عید گاہ گراونڈ میں ساتھی اہلکار
شاہ میر کے ساتھ ڈکیتی کی وارداتوں کی روک تھام کے لیے گشت پر تھا۔ انہوں نے بتایا کہ
مقابلے میں مارے گئے ڈاکوؤں کی شناخت عبدالباسط اور حبیب خان کے نام سے ہوئی ہے

نیب سکھر اور راولپنڈی نے مشترکہ طور پر کارروائی،خورشید شاہ(khurshid shah) کو گرفتار کر لیا

جن کا تعلق خضدار سے ہے جب کہ ایک ڈاکو فرار ہوگیا ہے جس کی تلاش جاری ہے۔
ایس ایس پی سینٹرل عارف اسلم راؤ نے بتایا کہ ہلاک ہونے والے ڈاکو صبح سویرے عیدگاہ
کے علاقے میں لوٹ مار کرتے تھے تاہم ڈاکوؤں کا کرمنل ریکارڈ اکٹھا کیا جارہا ہے۔

پولیس اہلکار ذیشان(zeeshan) کو اسپتال لایا گیا تاہم وہ اسپتال پہنچے سے قبل ہی شہید ہو چکے تھے۔ جام شہادت
نوش کرنے والے اہلکار کی اگلے ماہ شادی تھی۔ذیشان نے 2014 ء میں پولیس فورس میں شمولیت
اختیار کی تھی۔ذیشان(zeeshan) کے اہل خانہ غم سے نڈھال ہو گئے اور دھاڑیں مار مار کر روتے رہے۔
بتایا گیا ہے کہ عید گاہ گراؤنڈ کے قریب تین ملزم ڈکیتی کر کے فرار ہو رہے تھے۔گشت پر مامور
اہلکاروں نے روکا تو ڈاکوؤں نے فائرنگ شروع کر دی۔ ایس ایس پی سینٹرل عارف اسلم کا کہنا
ہے کہ ہلاک ڈاکو 6رکنی گینگ کے کارندے تھے۔ڈاکوؤں سے 30بور کے دو پستول برآمد ہوئے۔
ہلاک ہونے والے ڈاکوں کی شناخت حبیب اور عبدالباسط سے ہوئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں