12 سالہ بچی سے 5 درندوں کی زیادتی:نارووال(narowal)

narowal

نارووال(narowal) میں 12 سالہ لڑکی پانچ بھیڑیوں کی دردندگی کا نشانہ بن گئی،بتایا گیا ہے کہ کوٹ عبدالمالک شیخوپورہ
کا رہائشی اپنے اہل خانہ کے ہمراہ قریبی عزیز کی شادی میں شرکت کے لیے نارووال(narowal) کے سرحدی گاؤں گیا۔
جہاں سے واپسی پر پھاٹک بند ہونے کی وجہ باراتیوں کی گاڑیاں رک گئیں۔جس کے بعد 12 سالہ بچی نے اپنے
والد سے کہا کہ وہ اپنے ماموں اور کزن صباکے ساتھ موٹر سائیکل پر گاؤں جا رہی ہے۔وہ کچھ دور ہی گئے
تھے کہ ملزم (بچی کے ماموں کا ہمسایہ) آیا اور کہا کہ زہرا کو میرے ساتھ موٹر سائیکل پر بٹھا دیں وہ بھی
گاؤں جا رہا ہے لہذا با آسانی گھر پہنچ جائیں گے جس کے بعد بچی کے ماموں نے اسے ہمسائے کے ساتھ بٹھا
دیا،ملزم صداقت تیزی سے موٹر سائیکل چلاتے ہوئےبچی کو گاؤں لے گیا۔

خاتون سے زیادتی کے الزام میں 2 پولیس اہلکاروں(police man) سمیت 6 افراد کو گرفتار کر لیا

بچی کا ماموں جب گھر پہنچا تو معلوم ہوا کہ زہرا ابھی تک گھر نہیں پہنچی۔تشویش ہونے پر جب وہ ملزم
کے گھر گیا تو وہ گھر میں موجود نہ تھا۔جس کے بعد تمام رشتہ دار زہرا اور ملزم کی تلاش میں نکل پڑے۔

ایک برزگ نے بتایا کہ اس نے صداقت کو اپنے چار ساتھیوں کے ہمراہ دیکھا۔وہ ایک بچی کو زبردستی
موٹر سئایکل پر لے کر جا رہے تھے۔
یہ سنتے ہی سب کے پاؤں کے نیچے سے زمین سرک گئی۔وہ کھیتوں کی جانب بڑھے تو آگے سے ملزم
آ رہا تھا،تاہم اس نے کہا کہ وہ تو بچی کو چھوڑ کر گھر واپس آ گیا تھا۔تاہم شک کی بنیاد پر پولیس نے
ملزم کو گرفتار کیا تو اس نے پولیس کے سامنے بچی سے زیادتی کا اعتراف کیا اور کہ اس نے اپنے
چار ساتھیوں کے ہمراہ کھیتوں میں بچی سے زیادتی کی جس کے باعث اس کی موت ہو گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں