وزیراعظم(prime minister) کیخلاف توہین عدالت کی درخواست دائر

prime minister

تفصیلات کے مطابق لاہورہائیکورٹ میں درخواست ایڈووکیٹ
محمد فیضان نصیر چوہان اور طاہر مقصود بٹ نے دائر کی۔
درخواست میں وزیراعظم(prime minister) پاکستان عمران خان کو فریق بنایا گیا ہے
جس مین کہاگیاہے کہ وزیراعظم نےتقریر کرتے ہوئے عدلیہ کی
کارکردگی پر تنقید کی۔
درخواستگزارنے کہاکہ وزیراعظم عمران خان نےتقریرکے ذریعے
عدالتوں میں زیرسماعت اپوزیشن کے خلاف مقدمات پراثرانداز ہونے
کی کوشش کی۔
درخواست گزارنے کہاکہ اعلیٰ عدلیہ کے ججز اوران کے فیصلے
پرتنقید کرنا توہین عدالت کےزمرے میں آتا ہے،سپریم کورٹ نے
2013 میں عمران خان کو عدلیہ مخالف تقاریر کرنے پر توہین عدالت
کا نوٹس جاری کیا تھا۔

یقین ہو گیا،عمران خان ذہنی مریض بن چکے،مریم اورنگزیب(maryam aurangzeb)

درخواست گزارنے موقف اختیارکیاکہ عدلیہ مخالف بیان دینے پر
سپریم کورٹ نے طلال چوہدری اور نہال ہاشمی سمیت دیگر
سیاست دانوں کو سزائیں دی تھیں۔
درخواست گزار نے استدعا کی کہ عدلیہ مخالف بیان دینے پرعدالت
وزیراعظم(prime minister) عمران خان کو پارلیمنٹ سےنااہل قرار دےاوروزیراعظم
کے خلاف توہین کی کارروائی کا حکم دے کرانہیں ذاتی حیثیت میں
طلب کرکے وضاحت مانگی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں