اسحاق ڈار کے اثاثوں کی تفصیل بھی آگئی

اسلام آباد احتساب عدالت کی جانب سے اسحاق ڈار کے اثاثوں کی نیلامی کا حکم دے دیا گیا ہے ، نیب نے جن اثاثوں کو اٹیچ کیا تھا اس سے پتا چلتا ہے کہ سابق وزیر خزانہ نے اچھا خاصا دھن دولت اکٹھا کر رکھا ہے۔

اسحاق ڈار اور ان کی اہلیہ کے ٹرسٹس کے لاہور اور اسلام آباد میں مختلف بینکوں میں اکاﺅنٹس ہیں تاہم نیب کی جانب سے 6 بینک اکاﺅنٹس اٹیچ کیے گئے تھے جن میں پڑی رقم نکلوا کر قومی خزانے میں جمع کرانے کا حکم دیا گیا ہے۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت نے ملزم اسحاق ڈار کی جائیداد کی قرقی کے احکامات 14 دسمبر 2017 کو دیے تھے اور عدالتی حکم پر نیب نے ملزم کی پاکستان میں جائیداد 18 دسمبر 2017 کو قرق کر لی تھی۔ سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے مقامی ذرائع ابلاغ سے بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ ان 25 جائیدادوں کے بارے میں نیب نے بتایا ہے کہ ان میں سے 16 ان کی ملکیت ہی نہیں ہیں۔

اسحاق ڈار کے گلبرگ لاہور میں ایک گھر اور 4 پلاٹس ہیں جبکہ ان کے اسلام آباد میں بھی 4 پلاٹس ہیں۔اسحاق ڈار اوران کی اہلیہ کی پاکستان میں تین لینڈ کروز، دو مرسیڈیز اور ایک کرولا گاڑی ہے۔ انہوں نے ہجویری ہولڈنگ میں 34 لاکھ 54 ہزار کی سرمایہ کاری کر رکھی ہے۔ اسحاق ڈار کے دبئی میں تین فلیٹس اور ایک مرسیڈیز گاڑی ہے، ان کی بیرون ملک تین کمپنیوں میں شراکت داری بھی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں