”میں شعیب اختر سے ڈرتا تھا، پتہ نہیں تھا کہ وہ کون سی گیند منہ پر مارے گا اور کون سی۔۔۔“ باپ اور بیٹا کی کہانی شروع کرنے والے وریندر سہواگ کے انکشاف نے بھارتیوں کی ساری ’ہوا‘ نکال دی

نئی دہلی بھارت کے مایہ ناز سابق جارح مزاج بلے باز اور چیمپینز ٹرافی میں ’باپ، بیٹا‘ کی کہانی شروع کرنے والے وریندر سہواگ نے بالآخر اعتراف کر لیا ہے کہ شعیب اختر واحد باﺅلر ہیں جن کا سامنا کرتے ہوئے انہیں ڈر لگتا تھا۔

ایک انٹرویو میں وریندر سہواگ نے کہا کہ ”اگر کوئی ایسا باﺅلر تھا جس سے مجھے ڈر لگتا تھا تو وہ شعیب اختر تھے۔ آپ کو نہیں پتہ ہوتا کہ وہ کون سی گیند آپ کے پیر پر ماریں گے اور کون سی گیند سر پر لگے گی۔ اور انہوں نے میرے سر پر کئی باﺅنسرز مارے ہیں۔ مجھے ان سے ڈر لگتا تھا لیکن ان کی گیند پر شاٹ مارنے کا بھی بہت مزہ آتا تھا۔“

واضح رہے کہ اس سے قبل شعیب اختر نے کہا تھا کہ بھارت کے مایہ ناز بلے باز سچن ٹنڈولکر ان سے ڈرتے تھے اور اس حوالے سے انہوں نے ایک میچ کے دوران سچن کیساتھ لی گئی اپنی ایک تصویر بھی شیئر کی تھی جس میں وہ سچن ٹنڈولکر کے ہیلمٹ کو حوصلہ دینے کے انداز میں ہلاتے ہوئے نظر آئے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں