نیب گرفتاری

پنجاب یونیورسٹی کے سابق وی سی مجاہد کامران گرفتار

لاہور: (سحر نیوز) نیب کا بڑا قدم پنجاب یونیورسٹی میں بھی مبینہ بے ضابطگیوں کا کھاتہ کھول دیا تحقیقات شروع ،، سابق وائس چانسلر ڈاکٹر مجاہد کامران سمیت 6 افرا د دھر لیے۔

نیب نے سابق وی سی پنجاب یونیورسٹی مجاہد کامران کو حراست میں لے لیا، ذرائع کے مطابق مجاہد کامران پر 550 سے زائد افراد کو خلاف قانون بھرتی کرنے اور بے ضابطگیوں کا الزام ہے جس کی تحقیق نیب نے شروع کر دی ۔ مجاہد کامران نے اپنی اہلیہ کو غیر قانونی طور پر یونیورسٹی لاء کالج کی پرنسپل تعینات کیا، من پسند طلباء کو اسکالرشپس دیے اور پپرا رولز کی خلاف ورزی کرتے ہوئے من پسند کنٹریکٹر کو ٹھیکے دیے۔

نیب نے ڈاکٹر مجاہد کامران کے ساتھ ملوث دیگر پانچ افراد کو بھی گرفتار کیا ہے جن میں ڈاکٹر اورنگزیب عالمگیر، ڈاکٹر لیاقت علی، راس مسعود، امین اطہر اور کامران عابد شامل ہیں۔ نیب ذرائع کے مطابق 4 سابق رجسٹرار اور ایک ایڈیشنل رجسٹرار وی سی مجاہد کامران کے غیر قانونی کاموں میں معاون تھے۔

نیب کا ایگزیکٹو بورڈ ڈاکٹر مجاہد کامران کے خلاف انکوائری کی منظوری دے چکا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں