government employees

وفاقی حکومت نے سرکاری ملازمین (government employees) سے متعلق اہم فیصلہ کر لیا

اسلام آباد (سحر نیوز) : وفاقی حکومت نے تمام سرکاری ملازمین (government employees) کا ڈیٹا اکٹھا کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے جبکہ اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے گریڈ 1 سے 22 تک کے وفاقی ملازمین کی اہم تفصیلات طلب کر لی ہیں۔ تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے سرکاری ملازمین کا تمام ڈیٹا اکٹھا کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ اس ضمن میں گریڈ 1 سے گریڈ 22 کے تمام سرکاری ملازمین سے ان کی تمام تر تفصیلات طلب کی جائیں گی۔
سرکاری ملازمین سے تفصیلات مانگنے کے لیے دو صفحات پر مشتمل ایک فارم جاری کیا گیا ہے۔ اس فارم کے ذریعے ملازمین کو ذاتی اور پیشہ وارانہ تفصیلات جمع کروانے کی ہدایت کی گئی ہیں۔ فارم میں سرکاری ملازمین کا نام، ولدیت ، شناختی کارڈ نمبر ، دوہری شہریت، جنس، بلڈ گروپ، پاسپورٹ نمبر، ازدواجی حیثیت کی تفصیلات اورشریک حیات کی دوہری شہریت اور بچوں کی تفصیلات بھی طلب کی گئی ہیں ۔

اس کے علاوہ مذہب، گاڑی، موٹر سائیکل، معذور ہونے یا نہ ہونے کی تفصیلات، عہدہ، سکیل، سرکاری ملازمت شروع کرنے کی تاریخ، سروس گروپ ، تعیناتی کا مقام، صوبے کا نام، تعلیمی قابلیت کی تفصیلات طلب کی گئی ہیں۔ وفاقی حکومت نے جاری کردہ فارم میں ملازمین سے گذشتہ 3 سال میں حاصل ٹریننگ، رہائش اور یکم جولائی 2018ء تک کی پوزیشن کی تفصیلات بھی طلب کی ہیں۔
سرکاری ملازمین نے وفاقی حکومت کی جانب سے طلب کی گئی تفصیلات کے جواب میں اپنے اپنے فارمز حاصل کرنا شروع کر دئے ہیں۔ وفاقی حکومت نے طلب کی گئی تفصیلات کے حوالے مزید کوئی بیان جاری نہیں کیا گیا کہ آیا یہ تفصیلات کیوں طلب کی گئی ہیں اور حکومت ان تفصیلات کا کیا کرنے والی ہے البتہ سرکاری ملازمین نے اپنے اپنے فارمز حاصل کرنا شروع کر دئے ہیں۔
سرکاری ملازمین سے تفصیلات مانگنے کے لیے دو صفحات پر مشتمل ایک فارم جاری کیا گیا ہے۔ اس فارم کے ذریعے ملازمین کو ذاتی اور پیشہ وارانہ تفصیلات جمع کروانے کی ہدایت کی گئی ہیں۔ فارم میں سرکاری ملازمین کا نام، ولدیت ، شناختی کارڈ نمبر ، دوہری شہریت، جنس، بلڈ گروپ، پاسپورٹ نمبر، ازدواجی حیثیت کی تفصیلات اورشریک حیات کی دوہری شہریت اور بچوں کی تفصیلات بھی طلب کی گئی ہیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں