Kashmiri martyrs

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے ہاتھوں 3 کشمیری شہید(Kashmiri martyrs)

سرینگر: مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی فوج نے فائرنگ کرکے 3 کشمیری (Kashmiri martyrs) نوجوانوں کو شہید کردیا۔

کشمیر میڈیا سروس کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ریاستی دہشتگردی جاری ہے، بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر میں سرینگر کے علاقے مجگنڈ میں نام نہاد تلاشی اور سرچ آپریشن کے دوران فائرنگ کرکے 3 نوجوانوں کو شہید کردیا۔

کٹھ پتلی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ شہید ہونے والے تینوں نوجوان فائرنگ کے تبادلے میں مارے گئے۔ شہید نوجوانوں (Kashmiri martyrs) کی تاحال شناخت نہیں ہوسکی ہے، جبکہ بھارتی فوج نے آپریشن کے دوران 5 گھر بھی مسمار کردیے ہیں۔
اس خبرکوبھی پڑھیں: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی بربریت، ایک ماہ میں 48 کشمیری شہید

دوسری جانب نام نہاد سرچ آپریشن میں بے گناہ نوجوانوں کی شہادتوں پر کشمیری سڑکوں پر نکل آئے اور احتجاج کیا جس کے بعد حکام کی جانب سے علاقے میں موبائل اور انٹرنیٹ سروس معطل کردی گئی۔

واضح رہے کہ قابض بھارتی فوج نے گزشتہ ماہ خواتین اور بچوں سمیت 48 کشمیریوں کو شہید کردیاتھا جب کہ احتجاجی مظاہروں کو کچلنے کے لیے نہتے کشمیریوں پر پیلٹ گن، آنسوگیس، شیلنگ اور لاٹھی چارج کا بھی بے دریغ استعمال کیا تھا جس کے باعث 196 کشمیری زخمی ہوئے جن میں بزرگ اور خواتین شامل ہیں۔
کشمیر میڈیا سروس کے مطابق وادی کشمیر میں قابض بھارتی فوج کی جارحیت اور ظلم و بربریت کا سلسلہ دراز ہوتا جا رہا ہے، گزشتہ ماہ نام نہاد سرچ آپریشن اور ماورائے عدالت قتل کے واقعات میں 48 کشمیری شہید ہوگئے۔ شہید ہونے والوں میں 2 بچے اور 3 خواتین بھی شامل ہیں۔

انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزی کی مرتکب بھارتی فوج نے گزشتہ ماہ ہونے والے احتجاجی مظاہروں کو کچلنے کے لیے پیلٹ گن کا بے دریغ استعمال کیا جب کہ فائرنگ، آنسو گیس شیلنگ اور لاٹھی چارج کے باعث 196 کشمیری زخمی ہوئے جن میں بزرگ اور خواتین بھی شامل ہیں۔
قابض بھارتی فوج نے چادر اور چار دیواری کے تقدس کو پامال کرتے ہوئے 169 کشمیری رہنماؤں اور نوجوانوں کو حراست میں لیا، کئی حریت رہنما تاحال نظر بند ہیں، خاتوں رہنما آسیہ اندرابی اپنی دو ساتھیوں کے ہمراہ بھارتی جیل میں قید ہیں جب کہ 26 گھروں کو مسمار کرکے معصوم شہریوں کو دربدر کر دیا گیا۔

واضح رہے کہ 1989 سے اب تک 95 ہزار 234 کشمیری شہید (Kashmiri martyrs) ہوئے جن میں 7 ہزار 120 ماورائے عدالت قتل ہیں اور 1 لاکھ 45 ہزار 342 کو حراست میں لیا گیاشمیر میڈیا سروس کے مطابق وادی کشمیر میں قابض بھارتی فوج کی جارحیت اور ظلم و بربریت کا سلسلہ دراز ہوتا جا رہا ہے، گزشتہ ماہ نام نہاد سرچ آپریشن اور ماورائے عدالت قتل کے واقعات میں 48 کشمیری شہید ہوگئے۔ شہید ہونے والوں میں 2 بچے اور 3 خواتین بھی شامل ہیں۔

انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزی کی مرتکب بھارتی فوج نے گزشتہ ماہ ہونے والے احتجاجی مظاہروں کو کچلنے کے لیے پیلٹ گن کا بے دریغ استعمال کیا جب کہ فائرنگ، آنسو گیس شیلنگ اور لاٹھی چارج کے باعث 196 کشمیری زخمی ہوئے جن میں بزرگ اور خواتین بھی شامل ہیں۔
قابض بھارتی فوج نے چادر اور چار دیواری کے تقدس کو پامال کرتے ہوئے 169 کشمیری رہنماؤں اور نوجوانوں کو حراست میں لیا، کئی حریت رہنما تاحال نظر بند ہیں، خاتوں رہنما آسیہ اندرابی اپنی دو ساتھیوں کے ہمراہ بھارتی جیل میں قید ہیں جب کہ 26 گھروں کو مسمار کرکے معصوم شہریوں کو دربدر کر دیا گیا۔

واضح رہے کہ 1989 سے اب تک 95 ہزار 234 کشمیری شہید ہوئے جن میں 7 ہزار 120 ماورائے عدالت قتل ہیں اور 1 لاکھ 45 ہزار 342 کو حراست میں لیا گیا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں