PTI

تحریک انصاف (PTI) کے 14 وزراء کی برطرفی یا ان کیخلاف سخت ایکشن لیے جانے کا امکان

لاہور (سحر نیوز) تحریک انصاف (PTI) کے 14 وزراء کی برطرفی یا ان کیخلاف سخت ایکشن لیے جانے کا امکان، وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار کی جانب سے دی گئی ہدایات کے باوجود 14 وزراء نے 100 روزہ کارکردگی رپورٹ جمع نہ کروائی۔ تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کی پنجاب حکومت کے 14 وزراء بڑی مشکل میں پھنس گئے ہیں۔ وزیراعظم عمران خان نے کچھ روز قبل وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار کو ہدایت کی تھی کہ پنجاب حکومت کے وزراء کی 100 روزہ کارکردگی کی رپورٹ مرتب کی جائے۔
وزیراعظم عمران خان پنجاب کے وزراء کی کارکردگی کا خود جائزہ لے کر ان کے مستقبل کا فیصلہ کریں گے۔ وزیراعظم نے پنجاب حکومت کی 100 روزہ کارکردگی سے عوام کو آگاہ کرنے کیلئے خصوصی تقریب کے انعقاد کی ہدایت بھی کی تھی۔
وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار کی جانب سے دی گئی ہدایات کے باوجود 14 وزراء نے 100 روزہ کارگردگی رپورٹ جمع نہ کروائی

وزیراعظم کی ہدایت کے بعد وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار نے اپنی کابینہ کے وزراء کو 2 صفحوں پر مشتمل کارگردگی رپورٹ جمع کروانے کی ہدایت کی تھی۔

وزیراعلی نے اپنے کابینہ اراکین کو 8 دسمبر تک ہر صورت کارگردگی رپورٹ جمع کروانے کی ہدایت کی تھی۔ تاہم اب ذرائع کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ پنجاب حکومت کے 14 وزراء نے وزیراعلی پنجاب کے احکامات ہوا میں اڑا دیے۔ پنجاب کے 14 وزراء نے ڈیڈ لائن گزرنے کے باوجود اپنی کارکردگی رپورٹ جمع نہیں کروائی۔ اس حوالے سے وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار نے رپورٹ وزیراعظم کو بھیج دی ہے۔ وزیراعظم اگلے ہفتے پنجاب کے وزراء کی کارکردگی کا جائزہ لیں گے۔ ذرائع کے مطابق اس اجلاس کے دوران کارکردگی رپورٹ جمع نہ کروانے والے وزراء کیخلاف وزیراعظم عمران (PTI) خان سخت ایکشن لے سکتے ہیں۔ ممکنہ طور پر ان وزراء کو اپنی وزارتوں سے ہاتھ بھی دھونا پڑ سکتا ہے۔
وزیراعظم کی ہدایت کے بعد وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار نے اپنی کابینہ کے وزراء کو 2 صفحوں پر مشتمل کارگردگی رپورٹ جمع کروانے کی ہدایت کی تھی۔
جو وزراء کی طرف سے ابھی تک نہیں کرائی گئی.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں