Funding to terrorist

دشمن خفیہ ایجنسیوں کی دہشتگرد گروپوں کو فنڈنگ

اسلام آباد: دشمن خفیہ ایجنسیاں مختلف دہشتگرد گروپوں کو فنڈنگ (Funding to terrorist) کے ذریعے پاکستان میں دہشتگردی کے ناسورکو مزید ہوادے رہی ہیں۔

فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے 27 نکاتی ایکشن پلان پرعملدرآمدکے حوالے سے تیار رپورٹ میں انکشاف کیاگیا ہے کہ دشمن خفیہ ایجنسیاں پاکستان میں دہشتگردگروپوںکورقوم (Funding to terrorist) فراہم کر رہی ہیں ۔حکومت نے فنانسنگ رسک اسیسمنٹ رپورٹ کی منگل کومنظوری دی ہے۔

فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے پاکستان کوگرے لسٹ سے نکالنے کیلیے 27 نکاتی ایکشن پلان حوالے کیا ہے ۔یہ رپورٹ وزیرخزانہ اسدعمرکی زیرصدارت انسدادمنی لانڈرنگ پرقائم قومی ایگزیکٹوکمیٹی کے اجلاس میں پیش کی گئی۔ (Funding to terrorist)
جائزہ رپورٹ کے مختلف پہلوؤں پرتفصیلی غوروخوض کے بعدقومی ایگزیکٹو کمیٹی نے اہم پالیسی اورقانون سازی کے معاملوں پرفنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے تحفظات دورکرنے کیلیے اس کی منظوری دیدی ہے۔یہ رپورٹ اب اگلے ہفتے آسٹریلیا میں ایشیا پیسفک جوائنٹ گروپ کے اجلاس میں پیش کی جائے گی۔ حکومت کی جانب سے طالبان اورامریکا میں مذاکرات کیلیے مثبت کرداربین الاقوامی دباؤ کم کرنے میں مددگارثابت ہوسکتاہے۔
معاملہ سابق آئی ایس آئی چیف اسد درانی کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا

نیشنل رسک اسیسمنٹ رپورٹ کے مطابق غیرملکی فنڈنگ،منشیات اسمگلنگ،اغواء برائے تاوان،بھتہ،ڈکیتی اوربینک ڈکیتی کوپاکستان میں ٹیررفنانسنگ کے ذرائع بتایاگیاہے۔یہ پہلی جائزہ رپورٹ ہے جونیشنل کاؤنٹرٹیررازم اتھارٹی اورایف آئی اے نے مشترکہ طورپر تیارکی ہے۔

رپورٹ میں بتایاگیا ہے کہ بلوچستان اورسندھ میں سبوتاژکی کارروائیوں میں دشمن ایجنسیاں ملوث ہیں۔پاکستانی خفیہ اداروں نے پہلے ہی ایک بھارتی جاسوس کوپکڑ رکھا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں