Shahzad Akbar

نواز شریف سے قرضہ لینے والوں کو حکومت نے بری خبر سنا دی

اسلام آباد(سحر نیوز) :وزیر اعظم عمران خان کے معاون خصوصی شہزاد اکبر (Shahzad Akbar) نے نواز شریف سے قرضہ لینے والوں کو انتباہ کرتے ہوئے کہا کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف نے جن کو قرض دیا ،ان سے بھی ریکوری کی جائے گی۔تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت کی جانب سے سزا پانے کے بعد میاں محمد نواز شریف کو اڈیالہ جیل منتقل کیا جاچکا ہے جہاں سے کل انکو لاہور کے لیے روانہ کیا جائیگا اور وہ اپنی سزا کوٹ لکھپت میں کاٹیں گے۔
دوسری جانب احتساب عدالت نے العزیزیہ ریفرنس کیس کا تفصیلی فیصلہ جاری کر دیا ہے۔تفصیلی فیصلہ 131 صفحات پر مشتمل ہے۔فیصلے میں تحریری طور پر کہا گیا ہے کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف کرپشن اور بد عنوانی میں ملوث ہیں۔تحریری فیصلے کے مطابق نیب پراسیکیوٹر نے نواز شریف کی کرپشن ثابت کر دی ہے۔

یہ بھی پڑھیں. ڈیل کے معاملے پر تہمینہ درانی کھل کر سامنے آگئیں

کرپشن ثابت ہونے کے بعد ملزم نواز شریف کو 7 سال قید بامشقت کی سزا سنائی جاتی ہے ۔

اس کے علاوہ ملزم نواز شریف کو ڈیڑھ ارب روپے جرمانہ اور ڈیڑھ کروڑ ڈالر جرمانہ بھی ادا کرنا ہوگا۔تفصیلی فیصلے میں ہل میٹل کےتمام اثاثےبحق سرکارضبط کرنےکاحکم دیا گیا ہے جبکہ نوازشریف10سال عوامی عہدےکےلیےنااہل قرار قرار دئیے گئے ہیں۔دوسری جانب فلیگ شپ ریفرنس میں نوازشریف پرکوئی الزام ثابت نہیں ہواانہیں بری کیاجاتاہے۔عدالت نے تحریری فیصلے میں حکومت پاکستان کو حکم دیا ہے کہ نواز شریف کے اثاثے اپنی تحویل میں لے لیں۔

اس کے علاوہ حسن نواز اور حسین نواز کو مفرور ملزم قرار دیا گیا ہے۔اس پر حکومت کی جانب سے بھی باضابطہ ردعمل سامنے آ چکا ہے۔وزیر اعظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر (Shahzad Akbar) نے عدالتی احکامات پر عمل درآمد کے حوالے سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ سعودی حکومت سے رابطہ کرنے کا حکم ملا ہے جس پر لائحہ عمل ترتیب دے رہے ہیں جبکہ اگر نواز شریف کی جانب سے جرمانہ ادا نہ کیا گیا تو ان کی جائیداد کو فروخت کرکے جرمانہ قومی خزانے میں جمع کروایا جائے گا۔اس موقع پر انہوں نے کہا کہ جن لوگوں نے نواز شریف سے قرض لیا ان سے بھی وہ رقم نکلوائی جائے گی اور اسے قومی خزانے میں جمع کروایا جا ئے گا۔ (Shahzad Akbar)

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں