terrorism

کراچی میں دہشتگردی اور امن و امان کی صورتحال خراب کرنے میں کون ملوث ہے؟

کراچی (سحر نیوز) : کراچی میں حال ہی میں ایم کیو ایم کے سابق رکن قومی اسمبلی علی رضا عابدی کو ٹارگٹ کلنگ (terrorism)کے تحت ان کے گھر کے دروازے پر موت کے گھاٹ اُتار دیا گیا جس سے کراچی میں کافی خوف و ہراس پھیل گیا۔ کراچی کا امن و امان خراب کرنے اور شہریوں کو خوف و ہراس میں مبتلا کرنے کے پیچھے کون کون سے گروہ ملوث ہیں ایس ایس پی انوسٹی گیشن طارق دھاریجو نے اس حوالے سے اہم اشارہ دے دیا ہے۔
نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے سینیئر صحافی ندیم ملک نے کہا کہ ایس ایس پی انوسٹی گیشن کا کہنا ہے کہ ایم کیو ایم کے تین دھڑے ہیں جو کراچی میں خوف کی فضا قائم کر رہے ہیں اور ان ہی کا ایک سپلنٹر گروپ ہے جو کراچی میں اس طرح کے واقعات میں ملوث ہے۔ (terrorism)

جس پر ایس ایس پی انوسٹی گیشن طارق دھاریجو نے کہا کہ کراچی نے کافی عرصہ تک عسکریت پسندی دیکھی (terrorism) ہے۔

یہ بھی پڑھیں. ایم کیو ایم کے سابق علی رضا عابدی کی نماز جنازہ ادا کر دی گئی

1985ء سے لے کر اب تک کراچی عسکریت پسند گروپوں کا شکار رہا جس میں کئی عناصر ملوث ہیں۔ ان میں ہم صرف تین چار لوگوں کے نام نہیں لے سکے۔ پولیس اس مسئلے پر کام کر رہی ہے اور جلد ہی ان تمام کیسز کو حل کر لیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہم علی رضا عابدی کے قتل کے بعد سے ہی اس کیس پر دل جمعی کے ساتھ کام کر رہے ہیں، ہم نے کافی چیزیں پتہ کر لی ہیں، ہمیں روٹس بھی پتہ چل گئی ہیں، یہ کیس انشاء اللہ جلد ہی حل کر لیا جائے گا۔
انہوں نے کہا کہ ہم جیو فینسنگ کر رہے ہیں لیکن فلٹریشن میں وقت لگ رہا ہے۔ تکنیکی طور پر اس پر کام ہو رہا ہے اور اس حوالے سے ہیومن انٹیلی جنس پر بھی کام کیا جا رہا ہے۔ ایس ایس پی انوسٹی گیشن نے کہا کہ ہماری کوشش ہے کہ اس کیس کو جلد حل کر لیا جائے لیکن اس کیس کے حل کے لیے فی الوقت ہم کوئی ٹائم فریم نہیں دے سکتے کیونکہ ملزمان بھی چھُپیں گے اور ہم ان کے پیچھے جائیں گے مزید تحقیقات کریں گے کیونکہ ہمارا کام ہی ہے اُن کو پکڑنا ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں