Sheikh Zaid Hospital

لاہور ہائیکورٹ کا شیخ زید اسپتال سے متعلق اہم فیصلہ

لاہور(سحر نیوز) :لاہور ہائیکورٹ نے شیخ زید اسپتال (Sheikh Zaid Hospital) سے متعلق بڑا فیصلہ کیا ہے۔میڈیا رپورٹس میں بتایاگیا ہے کہ شیخ زید اسپتال (Sheikh Zaid Hospital) سے متعلق اہم خبر سامنے آئی ہے۔لاہور ہائیکورٹ نے شیخ زید اسپتال سے متعلق اہم فیصلہ کیا ہے۔عدالت نےشیخ زید اسپتال کا انتظام صوبے سے لے کر وفاق کے حوالے کر دیا ہے۔شیخ زید اسپتال 6سال سے صوبائی حکومت کے زیر انظام چل رہا تھا اور اب عدالت نے 6 سال بعد اسپتال کا انتظام صوبے سے لے کر وفاق کے حوالے کر دیا ہے۔
واضح رہے اپریل کے مہینے میں جب چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بینچ نے شیخ زید ہسپتال میں خلاف قانون تعیناتی کیس کی سماعت کی تھی تو چیف جسٹس نے اس معاملے پر ہائی کورٹ میں زیرالتواء مقدمات ایک ہفتے میں نمٹانے کا حکم دیا تھا۔

عدالت نے کہا تھا کہ شیخ زید ہسپتال (Sheikh Zaid Hospital) کی صوبے کو منتقلی کا بھی جائزہ لیں گے، 18ویں ترمیم کے بعد ہسپتال صوبے کو منتقل کیا گیا، کیوں نہ شیخ زید ہسپتال کا کنٹرول خود سنبھال لیں، بورڈ آف گورنرز کو تحلیل کردیتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں. افغان جنگ کے خاتمے کے لیے پاکستانی قیادت سے ملاقات کا منتظرہوں:صدر ٹرمپ

چیف جسٹس نے کہا کہ حمزہ شہباز کے کہنے پر شیخ زید اسپتال (Sheikh Zaid Hospital) کے چیئرمین فرید خان کو توسیع دی جارہی ہے، فرید خان کی مدت ملازمت میں توسیع کیوں کی گئی، کیا پنجاب حکومت کو کوئی اور بندہ نہیں ملتا ، فرید خان بورڈ آف گورنرز کو کیوں اتنا محبوب ہے۔ چیف جسٹس نے کہا کہ شیخ زید ہسپتال کو برباد کر کے رکھ دیا ہے، اپنے اسپتالوں کو تباہ نہیں ہونے دیں گے، انشاء اللہ ملک میں کوئی طبی ادارہ برباد نہیں ہو گا۔شیخ زید اسپتال 18 ویں ترمیم کے بعد صوبے کومنتقل ہوا تھا۔تاہم آج عداالت نے اس حوالے سے اہم فیصلہ کیا ہے۔عدالت نے 6 سال بعد شیخ زید اسپتال کا انتظام صوبے سے لے کر وفاق کے حوالے کر دیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں