Ahsan Iqbal

احسن اقبال کی وزیراعظم،وزیراعلیٰ کو دھمکی

لاہور(سحر نیوز) پاکستان مسلم لیگ ن کے مرکزی رہنماء احسن اقبال (Ahsan Iqbal) نے سابق وزیراعظم نوازشریف کو طبی سہولیات فراہم نہ کرنے پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ خبردار کیا ہے کہ نوازشریف کو کچھ ہوا تومقدمہ درج کروائیں گے، مقدمہ وزیراعظم، وزیراعلیٰ پنجاب، سیکرٹری داخلہ اور سپرنٹنڈنٹ جیل کیخلاف درج کروائیں گے۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق مسلم لیگ ن کے قائد سابق وزیراعظم نوازشریف کی صحت کو شدید خطرات لاحق ہوگئے ہیں۔ان کے بازو میں سارا دن درد کی شکایت رہی۔ نوازشریف کا معالج سارا دن ان کا طبی معائنہ کرنے کیلئے جیل کے باہر بیٹھا رہا لیکن انہیں ملاقات کی اجازت نہیں دی گئی۔ نوازشریف کی صحت کو لاحق خطرات سے متعلق ن لیگی رہنماؤں کا شدید ردعمل سامنے آیا ہے۔

احسن اقبال (Ahsan Iqbal) کا کہنا ہے کہ نوازشریف کی صحت کو کچھ ہوا تومقدمہ درج کروائیں گے۔انہوں نے کہا کہ مقدمہ وزیراعظم، وزیراعلیٰ پنجاب، سیکرٹری داخلہ اور سپرنٹنڈنٹ جیل کیخلاف درج کروائیں گے۔ اسی طرح ن لیگ کی مرکزی رہنماء مریم نواز نے کہا کہ نوازشریف کے بازومیں دن بھردرد رہا۔ نوازشریف کے بازومیں درد ہے یہ انجائنا ہوسکتا ہے۔ نوازشریف کے معالجوں نے سارادن کوشش کی لیکن ڈاکٹرز کو جیل حکام نے نوازشریف سے ملاقات کی اجازت نہیں دی۔

یہ بھی پڑھیں.نوازشریف کوانجائنا کا خطرہ لاحق ہوسکتا ہے، ذاتی معالج ڈاکٹرعدنان

انہوں نے کہا کہ نوازشریف کی پیچیدہ میڈیکل ہسٹری کے باعث انہیں قابل اعتماد ڈاکٹر کودکھانے کی ضرورت ہے۔ (Ahsan Iqbal) ترجمان ن لیگ مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ نوازشریف کےمعالجین امراض قلب کوجیل میں نوازشریف تک رسائی نہ دیناظلم ہے۔ رانا ثناء اللہ نے کہا کہ نوازشریف کےعلاج میں کوئی کوتاہی برداشت نہیں کی جائے گی۔ نوازشریف کی صحت کوکچھ ہوا توعوام حکومت کی اینٹ سے اینٹ بجا دیں گے۔
واضح رہے جیل حکام نے نوازشریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان کوملاقات کی اجازت نہیں دی۔ ڈاکٹرعدنان کا کہنا ہے کہ میں نے صبح سے شام تک کوٹ لکھپت جیل میں ملاقات کا انتظار کرتا رہا۔ لیکن مجھے ملاقات کی اجازت نہیں دی گئی۔ سابق وزیراعظم کے بازومیں وقفے وقفے سے دردکی شکایت ہے۔ نوازشریف د ل کے عارضے میں مبتلا ہیں اس لیے ان کو خطرات لاحق ہوسکتے ہیں۔ (Ahsan Iqbal)

سابق وزیراعظم نوازشریف کے ذاتی معالج کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم نوازشریف کو انجائنا کا خطرہ لاحق ہوسکتا ہے۔ فوری علاج نہ کیا گیا تو نوازشریف کی صحت سے متعلق کوئی بھی خطرناک صورتحال پیدا ہوسکتی ہے۔ ڈاکٹر عدنان کا کہنا ہے کہ جیل حکام نے میری شام کو جیل کے ڈاکٹر سے بات کروائی۔ مجھے کہا گیا ہے کہ آپ پیر کو ملاقات کر لینا۔ لیکن میرے خیال میں نوازشریف کا فوری طبی معائنہ کرنا بہت ضروری ہے۔ اگر نوازشریف کا فوری چیک اپ کے بعد علاج نہ کیا گیا توان کی صحت اور زندگی کو خطرہ لاحق ہوسکتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں