Thomas Klee

سوات کی خوبصورتی نے سویٹزر لینڈ کے سفیر کو اپنا دیوانہ بنا لیا

سوات (سحر نیوز ) سویٹزر لینڈ کے سفیر تھامس کولے (Thomas Klee) کا کہنا ہے کہ حکومت گذشتہ 50سالوں سے پاکستان میں کئی ترقیاتی منصوبوں پر کام کر رہے ہیں۔انہوں نے یہ بات ” ایکسپلورنگ خیبر پختونخوا” پروگرام کی ایک تقریب میں کی۔تھامس کولے نے کہا کہ سوات اور سوئیزلینڈ کی زمین کی تزئین ایک جیسی ہے۔انہوں نے کہا کہ سوات میں ہوتے ہوئے مجھے ایسا لگ رہا ہے کہ میں سویٹزر لینڈ میں ہوں۔
ہماری حکومت چاہتی ہے کہ اس ملک کی خوشحالی اور سیاحت کے شعبے میں ترقی کو فروغ ملے. سویٹزرلینڈ صرف شعبہ سیاحت کی وجہ سے جی ڈی پی کا 10 فیصد حاصل کرتے ہیں۔خیبر پختونخوا میں سیاحوں کو اپنی طرف کھینچنے کی صلاحیت موجود ہے۔جب کہ اس موقع پر سینئیر منسٹر پختونخواہ عاطف خان کا کہنا تھا کہ ” کے پی ٹورازم اتھارٹی” کا قیام صوبے میں سیاحت کو فروغ دینے کے لیے عمل میں لایا گیا ہے۔ (Thomas Klee)

یہ بھی پڑھیں.آسیہ بی بی اس وقت کینیڈا میں موجود ہیں

ان کا کہنا تھا کہ سیاحت کے ذریعے سے دنیا بھر میں پاکستان میں مثبت تصویر اجاگر کی جاتی ہے اور ہم نے چترال اور ہنزہ میں دو جگہیں دیکھی ہیں جہاں اسکینگ ریزارٹ بنائے جائیں گے تاکہ زیادہ سے زیادہ سیاح اس طرح زیادہ سے زیادہ سیاح یہاں کا رخ کر سکیں گے۔انہوں نے یہ بھی کہا کہ خیبر پختونخواہ کے لوگوں کو امن اور خوشحالی کی ضرورت ہے۔ اور سیاحت ان مقاصد کو حاصل کرنے کے لئے ایک ذریعہ ہے۔ (ط)
عاطف خان نے پاکستان کی ترقی میں دلچسپی لانے کے لئے سوئٹزرلینڈ کی حکومت کی تعریف کی.عاطف خان نے مزید کہا کہ کہ محکمہ سیاحت کے زیر اہتمامسوات،چترال اور ہزارہ میں کئی نئے مقامات پر سکی ریزارٹ بنا ئے جارہے ہیں جس کا انتظام نجی شعبہ کرے گا صوبے میں سیاحت کے فروغ کیلئے کے پی ٹورازم اتھارٹی کا قیام بھی عمل میں لایا جارہا ہے جس کی منظوری کابینہ دے چکی ہے اسی طرح ہم وفاق کی سطح پر بھی سیاحت کے فروغ کے لئے ویزہ پالیسی میں رعایت دے رہے ہیں ہم نے مختصر عرصے میں سیاحت کے ذریعے دنیا بھر میں پاکستان کا امیج بہتر بنایا ہے۔
ع پر سویٹزر لینڈ کے سفیر تھامس کولے (Thomas Klee) اور چیئرمین ڈیڈیک فضل حکیم خان کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ سوات میں سیاحت دوبارہ بحال ہوچکی ہے سیاحت کی وجہ سے خیبر پختونخوا کی رونقیں بھی بحال ہو رہی ہیں اور باالخصوص سوات کے عوام کیلئے انتہائی خوشی کی بات ہے کہ سیاحت دوبارہ بحال ہونے لگی ہے انہوں نے کہا کہ سیاحت سے مقامی لوگوں کو روزگار ملے گا اور ملکی معیشت کو بھی فائدہ پہنچے گا انہوں نے کہا کہ ہم آئندہ سیزن میں سیاحوں کی رہنمائی کے لئے ٹورسٹ پولیس فورس بھی بنائینگے جس سے سیاحوں کو مختلف سیاحتی مقامات تک پہنچانے اور ان کی حفاظت یقینی بنانے میں مدد ملے گی انہوں نے کہا کہ سیاحت کی وجہ سے پاکستان اور خیبر پختونخوا کا بہتر امیج دنیا کے سامنے جا رہا ہے اور اب دنیا کو پتا چل گیا ہے کہ پاکستانی امن پسند اور مہمان نواز لوگ ہیں۔ (Thomas Klee)

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں