احتساب عدالت (National Accountability Bureau)کے جج ارشد ملک کی ویڈیو اصلی قرار ، مریم نواز کا رد عمل بھی آ گیا

National Accountability Bureau

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے ٹویٹر پر پیغام جاری کر دیا

اسلام آباد ( تازہ ترین اخبار۔ 20 جولائی 2019ء) : احتساب عدالت (National Accountability Bureau)
کے جج ارشد ملک کی ویڈیو کو اصل قرار دے دیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب سائنس فرانزک لیبارٹری
نے احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کی ویڈیو سے متعلق اپنی رپورٹ میں وڈیو کو اصل قرار دیا
جس کے بعد مسلم لیگ ن کی صدر مریم نواز کا رد عمل بھی آگیا ہے۔
مریم نواز نے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے پیغام میں اس خبر
کو شئیر کرتے ہوئے کہا ”اللہ اکبر”۔

یاد رہے کہ مسلم لیگ ن کی جانب سے احتساب عدالت(National Accountability Bureau) کے جج ارشد ملک
کی ویڈیو جاری کی گئی تامریکا (United States)کی وزیراعظم کو اپنا مہمان بنا کر رہائش کی پیشکشھی
جس کی بنیاد پر مسلم لیگ ن نے جج ارشد ملک پر الزام عائد کیا تھا کہ انہوں نے سابق وزیراعظم نواز شریف
کے خلاف کیسز کے فیصلے دباؤ میں آ کر دئے۔

امریکا (United States)کی وزیراعظم کو اپنا مہمان بنا کر رہائش کی پیشکش

اس پریس کانفرنس میں مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے میڈیا کو جج ارشد ملک
کی ویڈیو دکھائی جبکہ ان کے ہمراہ مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف اورمسلم لیگ ن
کے دیگر رہنما بھی موجود تھے۔

احتساب عدالت (National Accountability Bureau)کے جج ارشد ملک کے خلاف مبینہ ویڈیو
منظر عام پر لانے سے قبل مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے چار گھنٹے کی طویل
مشاورت کی تھی۔ مریم نواز شریف نے اپنی پریس کانفرنس سے قبل پارٹی صدر شہباز شریف
و دیگر سینئیر رہنماؤں سے تقریباً 4 گھنٹے تک مشاورت کی اور ان کو ریلیز کی جانے والی
اس ویڈیو اور آڈیو سے متعلق آگاہ کیا مسلم لیگ ن کی جانب سے جج ارشد ملک کی یہ ویڈیو ریلیز
کیے جانے کے بعد سے ہی سوشل میڈیا اور دیگر میڈیا چینلز پر اس حوالے سے
کافی بحث و مباحثہ بھی کیا گیا۔

جس کے بعد احتساب عدالت کے جج ارشد ملک نے اپنا بیان حلفی جمع کروایا جس میں انہوں نے کہا کہ
مجھے شریف خاندان کی جانب سے رشوت کی پیشکش کی گئی تھی۔ جج ارشد ملک نے اس حوالے سے
اپنے بیان حلفی میں مزید بھی کئی انکشافات کیے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں