سزا معطل ہونے سے کوئی نا اہل شخص الیکشن(election) کے لیے اہل نہیں ہو سکتا

election

سپریم کورٹ آف پاکستان نے وضاحت کر دی

اسلام آباد ( تازہ ترین اخبار۔ 22 جولائی 2019ء) : سپریم کورٹ آف پاکستان نے نااہلیت سے
متعلق وضاحت جاری کر دی۔ تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے سزا معطلی اور
انتخابی اہلیت سے متعلق اہم فیصلہ سناتے ہوئے واضح کیا کہ سزا معطل ہونے سے
نا اہل شخص الیکشن (election)کے لیے اہل نہیں ہو سکتا۔ سزا کالعدم ہونے تک نا اہلی برقرار
رہے گی۔ تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ آف پاکستان نے سزا معطلی او
ر انتخابی اہلیت سے متعلق اہم فیصلہ جاری کر دیا۔

وزیراعظم عمران خان کی امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ(Donald Trump) سے اہم ملاقات

آٹھ صفحات پر مشتمل فیصلہ جسٹس اعجاز الاحسن نے تحریر کیا ہے۔ سپریم کورٹ
نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ اپیل معطل ہونے سے سزا پر کوئی اثر نہیں پڑتا۔
سزا معطلی سے جرم ثابت ہونے کی وجوہات ختم نہیں ہوتیں۔ سزا معطل ہونے
سے نااہل شخص الیکشن(election) کے لیے اہل نہیں ہو سکتا۔ فیصلے میں
سپریم کورٹ نے واضح کیا کہ سزا کالعدم ہونے تک نا اہلی برقرار رہے گی اور
انتخابی اہلیت سزا معطلی کے وقت عدالت کی تحریری اجازت سے ہو سکتی ہے۔
سپریم کورٹ نے فیصلہ گجرات کے بلدیاتی اُمیدوار کی درخواست پر سنایا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں