حوثیوں کا سعودی عرب(Saudi Arabia) کے گیس پلانٹ پر ڈرون حملہ

اس ڈرون حملے میں الشیبہ آئل فیلڈ کے ایک پروسیسنگ یونٹ کو نشانہ بنایا گیا

Saudi Arabia

ریاض(اخبارتازہ ترین،19 اگست 2019ء) حوثیوں کی جانب سے سعودی عرب(Saudi Arabia)پر کیے جانے والے میزائل اور ڈرون حملوں میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔ ایسا ہی ایک اور حملہہفتہ کی صبح 6 بج کر 20 منٹ پر الشیبہ آئل فیلڈ پر کیا گیا تاہم اس سے آئل فیلڈ کو معمولینقصان پہنچا اور دھماکہ خیز مواد کے باعث لگنے والی آگ کو فوری طور پر بُجھا لیا گیا۔ سعودی خبر رساں ایجنسی ایس پی اے نے اس واقعے پر وزیر توانائی خالد الفالح کا بیان جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس ڈرون حملے میں الشیبہ آئل فیلڈ کے ایک پروسیسنگ یونٹ کو نشانہ بنایا گیا۔تاہم اس سے تھوڑی سی آگ بھڑکی، جسے موقع پر موجود سٹاف نے فوری طور پر بُجھا کر آگ پر قابو پا لیا۔ اس حملے میں خوش قسمتی سے کسی بھی شخص کو معمولی خراش تک نہیں آئی۔

مودی سرکار(modi sarkar) کی بھارتی مسلمانوں کو مہاجر قراردے کر ملک بدر کرنے کی سازش

وزیر توانائی نے کہا کہ حوثیوں کا مقصد یہ تھا کہ اس آئل فیلڈ پر آگ بھڑکنے سے یہاں سے تیل کی پیداوار وقتی طور پر متاثر ہو گی، مگر اُن کا یہ ہدف پُورا نہ ہو سکا۔ اس آئل فیلڈ سے تیل کی نکاسی اور سپلائی مسلسل بنیادوں پر جاری ہے۔سعودی وزیر کا مزید کہنا تھا کہ سعودی عرب (Saudi Arabia)اس بزدلانہ حملے کی سخت الفاظ میں مذمت کرتا ہے۔ آئل فیلڈ پر کیے جانے والے حملوں کا مقصد نہ صرف سعودی عرب (Saudi Arabia)بلکہ عالمی سطح پر تیل کی سپلائی میں کمی لا کر دُنیا بھر کو نقصان پہنچانا ہے۔ واضح رہے کہ سعودی آرامکو کی ویب سائٹ پر اس حملے کے حوالے سے بھی ایک بیان جاری کیا گیا تھا جس میں بتایا گیا تھا کہ دہران میں سعودی آرامکو کی رسپانس ٹیم نے ہفتے کی صبح الشیبہ این جی ایل پلانٹ پر لگنے والی محدود آگ پر قابو پا لیا۔ کوئی زخمی ہو ا اور نہ ہی سعودی آرامکو کے آئل آپریشنز میں خلل پڑا۔ 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں