عوام کیلئے بڑی خوشخبری:پٹرولیم (Petroleum)مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی سمری پٹرولیم ڈویژن کو موصول ہوگئی

Petroleum

عوام کیلئے بڑی خوشخبری ، حکومت نے بڑا فیصلہ کا لیا ۔میڈیا رپورٹس کے مطابق پیٹرولیم(Petroleum) مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی سمری پیٹرولیم ڈویژن کو موصول ہو گئی ہے جس میں پیٹرول کی قیمت میں 4روپے 59 پیسے فی لیٹرکی تجویز کی گئی ہے، جبکہ مٹی کے تیل کی قیمت میں 4روپے 27 پیسے لیٹر کمی، ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں 7روپے 67 پیسے اور لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 5روپے 63 پیسے فی لیٹر کمی کی سفارش کی گئی ہے۔سمری پر فیصلہ وزارت خزانہ کی مشاورت کے بعد ہو گا جس کے تحت نئی قیمتوں پر
عمل درآمد یکم ستمبر سے ہو گا ۔

حکومت برآمدات(export) بڑھانے کیلئے تمام اقدامات بروئے کار لائے گی، اینٹی ڈمپنگ ڈیوٹی کا مسئلہ جلد حل کر لیا جائے گا،

خام تیل کی قیمت رواں سال کی کم ترین سطح پر آگئی،گذشتہ 4 ماہ کے دوران خام تیل کی قیمتوں میں 16 ڈالر فی بیرل کی کمی ہوئی۔عالمی مارکیٹ کے مطابق 19 روپے 32 پیسے فی لٹر کمی ہونی چاہئیے۔ عالمی مارکیٹ کی کمی اور مقامی ٹیکسز شامل کر کے پٹرول کی قیمت 98روپے 68پیسے بنتی ہے۔میڈیا رپورٹس میں مزید بتایا گیا ہے کہ اوگرا نے اب تک جو وورکنگ کی ہے اس کے مطابق پٹرولیم(Petroleum) مصنوعات کی قیمتوں میں 8روپے فی لیٹرکمی کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔کہا جا رہا ہے کہ پٹرول کی قیمت میں 6روپے جب کہ ڈیزل کی قیمت میں 8روپے فی لیٹر تک کمی کی جا سکتی ہے۔ی۔واضح رہے مشیر خزانہ حفیظ شیخ نے پاکستانی عوام کو خوشخبری سنائی تھی ۔ مشیر خزانہ کی جانب سے اعلان کیا گیا تھا کہ یکم ستمبر سے پاکستان میں پیٹرولیم(Petroleum) مصنوعات کی قیمتوں کی مد میں کمی کیے جانے کا امکان ہے۔ مشیر خزانہ حفیظ شیخ کا کہنا ہے کہ عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں کمی کا رجحان دیکھا جا رہا ہے۔ حکومت کی کوشش ہے کہ عالمی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں جو کمی ہو رہی ہے کا اس کا فائدہ عوام کو پہنچایا جائے۔ اسی لیے اگلے ماہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کی جا سکتی ہے۔ مشیر خزانہ کہتے ہیں کہ ہم نے 262 ارب روپے سبسڈی کی مد میں رکھے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں