نواز شریف(Mian nawaz sharif) کو بہت جلد 12 ارب ڈالر کے عوض رہائی دی جارہی ہے۔

نواز شریف( Mian nawaz sharif) ہمیشہ کے لیے ملک سے باہر؛مریم نواز 10 سال کے لیے ملک اور سیاست سے باہر، شریف خاندان کے ساتھ شرائط طے کر لی گئیں

Mian nawaz sharif

سینئرصحافی و تجزیہ کار صابر شاکر نے کہا کہ سابق وزیراعظم نواز شریف (Mian nawaz sharif) نے پلی بارگین پر آمادگی ظاہر کر دی ہے۔ اُن کا کہنا ہے کہ اس سلسلے میں معاملات طے کیے جائیں اور براہ راست طے کیے جائیں۔ کیونکہ پہلے اُن تک کچھ چیزیں نہیں پہنچ رہی تھیں۔ بریکنگ نیوز یہ ہے کہ اب نواز شریف( Mian nawaz sharif) معاملات براہ راست طے کر رہے ہیں۔انہوں نے پیغام بھجوایا ہے اور اس میں کچھ ریٹائرڈ سروس کے لوگ ہیں جن میں عدلیہ اور فوج کے کچھ لوگ شامل ہیں جو مشترکہ دوست ہیں۔ کیونکہ یہ بات اُن تک پہنچا دی گئی تھی اس معاملے کو حل کرنے کا پلی بارگین کے علاوہ کوئی طریقہ یا آپشن نہیں ہے۔

9اور 10محرم الحرام(muharram ul haram) کو ملک بھر میں عام تعطیل کا اعلان کر دیا ہے

خیال رہے اس سے قبل جان اچکزئی نے آصف علی زرداری سے متعلق بھی دعویٰ کیا تھا۔معروف صحافی جان اچکزئی کا دعویٰ تھا کہ آصف زرداری نے کیسز کے خاتمے کیلئے 20 ارب ڈالرز کی پیش کش کر دی، تاہم وزیراعظم نے پیش کش مسترد کردی، عمران خان پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین کو سزا دلوائے بنا چھوڑنے کیلئے راضی نہیں۔

نواز شریف( Mian nawaz sharif) بارہ ارب ڈالر دینے کیلئے تیار ہیں۔
جبکہ ہو سکتا ہے کہ وہ اس سے بھی زیادہ دیں جس پر انھوں نے رضامندی ظاہر کی ہے۔

اس ڈیل کی کنڈیشنز یہ ہیں کہ نواز شریف صاحب ہمیشہ کیلئے ملک سے باہر چلے جائیں گے۔سیاست سے آؤٹ ہو جائیں گے۔

جبکہ ان کی بیٹی مریم نواز صاحبہ دس سال کیلئے ملک سے باہر جائیں گی۔اور سیاست میں حصہ نہیں لیں گی۔

اس ڈیل کے حوالے سے یہ سامنے آرہا ہےکہ تین سے چار ہفتوں میں یہ ڈیل مکمل ہو جائے گی

اور پورے خاندان کو سیف ایگزٹ ملے گا

لیکن انھوں نے یہاں ایک بات واضح کی کہ اس ڈیل میں صرف نواز شریف کا خاندان شامل ہے

جبکہ شہباز شریف کا خاندان اس میں شامل نہیں ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں