ایم این اے شکور شاد(shakoor shad) تحریک انصاف کی جانب سے نظر انداز کیے جانے پر پھٹ پڑے

shakoor shad

پیپلز پارٹی کے گڑھ لیاری سے بلاول بھٹو کے مقابلے میں جیتنے والے پی ٹی آئی کے رکن قومی اسمبلی شکور شاد(shakoor shad) نے پارٹی قیادت کی طرف سے نظر انداز کئے جانے پر ناراضی کا اظہار کرتے ہوئے مستعفی ہونے کی دھمکی دی ہے۔

پی ٹی آئی رکن قومی اسمبلی شکور شاد(shakoor shad) نے جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مجھے نظر انداز کیا جارہا ہے، گزشتہ روز سندھ انفراسٹکچر ڈویلپمنٹ کمپنی لمیٹڈ کی میٹنگ میں بھی نہیں بلایا گیا۔

انہوں نے کہا کہ اجلاس میں گورنر سندھ، وفاقی وزیر خسرو بختیار سمیت دیگر نے شرکت کی، میں اس کی کمیٹی کا ممبر ہوں، نہ بلا کر توہین کی گئی۔

انہوں نے مزید کہا کہ نظر انداز کیے جانے پر کمیٹی سے مستعفی ہو رہا ہوں۔ اگر مسلسل نظر انداز کیا گیا تو مزید سخت فیصلے بھی کر سکتا ہوں۔

خیال رہے اس سے قبل پی ٹی آئی ایم این اے عامر لیاقت نے بھی ایسے ہی خدشات کا اظہار کیا تھا۔ ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کا کہنا ہے کہ مجھے مسلسل نظر انداز کیا جا رہا ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار(sardar usman buzdar) کے کاہیلی کاپٹر کو حادثہ پیش آیا

ڈاکٹر عامر لیاقت حسین اپنی پارٹی سے ناخوش ہیں اور یہی وجہ ہے کہ وہ گذشتہ کچھ ہفتوں سے پارٹی رہنماؤں علی زیدی اور فردوس عاشق اعوان پر کڑی تنقید کرتے بھی نظر آئے۔وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی نے دو ہفتے قبل کلین کراچی کے نام سے ایک مہم کا آغاز کیا جس پر انہوں نے ڈاکٹر عامر لیاقت حسین سے مشاورت نہیں کی جس پر وہ علی زیدی سے ناراض ہو گئے اور انہیں تنقید کا نشانہ بنایا۔ عامر لیاقت حسین نے علی زیدی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئےنجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں کہا کہ وہ شاید کراچی کے مئیر بننا چاہتے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں