سابق پورن سٹار میا خلیفہ(mia khalifa) نے فحش فلمیں بنانے والے ہدایتکاروں پر الزام لگایا ہے

mia khalifa

قابل اعتراض اور فحش مناظر فلم بند کروانے والی سابق اداکارہ، سوشل میڈیا اسٹار اور اسپورٹس اینکر میا خلیفہ(mia khalifa) نے گزشتہ ماہ 15 اگست کو ایک انٹرویو کے دوران پہلی مرتبہ پورن انڈسٹری کے حوالے سے کھل کر بات کرکے سب کو حیران کردیا تھا . میا خلیفہ(mia khalifa) کا کہنا تھا کہ پورن انڈسٹری میں لڑکیاں مجبوری کے تحت آتی ہیں اور ان کی کمزوریوں کو دیکھتے ہوئے ایسی فلمیں بنانے والے ان کا فائدہ اٹھاتے ہیں .

انہوں نے پہلی مرتبہ اپنے ماضی پر کھل کر بات کرتے ہوئے اعتراف کیا تھا کہ وہ مجبوری کے تحت فحش فلموں میں گئیں اور اب تک انہیں اپنے ماضی پر شرمندگی ہے۔انہوں نے انٹرویو میں یہ اعتراف بھی کیا تھا کہ انہوں نے پورن فلموں میں کام کرنے سے محض 12 ہزار امریکی ڈالر یعنی پاکستانی لگ بھگ 15 لاکھ روپے کمائے۔

اداکارہ ثنا جاوید(sana javed) نے مشکل کرداروں کو ہمیشہ چیلنج کیا

انہوں نے اس تاثر کو مسترد کیا تھا کہ فحش فلموں میں کام کرنے والی اداکاراؤں کو کثیر رقم کی ادائیگی کی جاتی ہے۔اور اب انہوں نے اپنے ماضی اور حال کے حوالے سے مزید بات کرتے ہوئے کہا کہ پورن انڈسٹری کو چھوڑے جانے کے باوجود آج تک انہیں عزت کی نگاہ سے نہیں دیکھا جاتا۔برطانوی نشریاتی ادارے ’بی بی سی‘ کے پروگرام ’ہارڈ ٹاک‘ میں بات کرتے ہوئے میا خلیفہ(mia khalifa) کا کہنا تھا کہ انہیں انڈسٹری چھوڑے ہوئے 4 سال سے زائد کا عرصہ ہوگیا لیکن اب بھی ان کا نام اسی انڈسٹری سے جوڑا جاتا ہے اور انہیں ماضی جیسا ہی سمجھا جاتا ہے۔

حالانکہ ان کا پورن کیریئر خاصا مختصر تھا، اس دوران انھوں نے کئی تنازعے بھی کھڑے کیے۔

اپنے سب سے مشہور سین میں وہ حجاب پہن کر سیکس کرتی ہوئی نظر آئیں۔

جونھی یہ ویڈیو انٹرنیٹ پر لگی، ایک کہرام برپا ہو گیا۔ دولتِ اسلامیہ نے مجھے قتل کر دینے کی دھمکیاں دینی شروع کر دیں اور انھوں نے مجھے گوگل میپس کے ذریعے میرے اپارٹمنٹ کی تصاویر بھی بھیجیں‘ اس واقعے کے دو ہفتے تک میں ہوٹل میں رہی کیونکہ مجھے بہت ڈر لگ رہا تھا۔‘

میا کے انسٹاگرام پر ایک کروڑ 70 لاکھ فالوور ہیں جن میں سے کئی ان کو ٹرول بھی کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔

لیکن میا کے مطابق ’یہ چھوٹی چھوٹی باتیں مجھے تنگ نہیں کرتیں۔ مجھے بس یہی فکر ہوتی ہے کہ کہیں ان کا تعلق دولتِ اسلامیہ سے تو نہیں؟ اگر نہیں تو ٹھیک ہے۔‘

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں