کشمیریوں کی آزادی کے لیے آخری گولی اور آخری سپاہی تک لڑیں گے- میجرجنرل آصف غفور(Major Gen asif ghafoor)

نیوکلئیر پالیسی جلسے جلوسوں میں نہیں بتائی جا سکتی ۔ ڈی جی آئی ایس پی آر

Major Gen asif ghafoor

میجر جنرل آصف غفور(Major Gen asif ghafoor) نے کہا کہ نیوکلئیر پالیسیز پریس بریفنگ یا جلسے جلوسوں میں نہیں بتائی جاتیں۔ یہ ریاستی پالیسی ہوتی ہے جس کا آپ کو بھی علم ہے۔ انہوں نے کہا کہ نیوکلئیر پالیسی پریس کانفرنس اور جلسے جلوسوں میں نہ بنتی ہے اور نہ ہی تبدیل ہوتی ہے۔

ذمہ دار ریاست اس معاملے پر بات بھی نہیں کرتی کیونکہ یہ سنجیدہ معاملہ ہوتا ہے۔ جنگ میں ہتھیاروں اور فوج کی تعداد کو نہیں دیکھا جاتا ، یہ صرف حب الوطنی اور جذبے کی بات ہوتی ہے۔آپ کو مکمل اعتماد ہونا چاہئیے ۔ یہ عوام کے کرنے کی بات نہیں ہے۔ عوام کو صرف اس بات کا یقین ہونا چاہئیے کہ ہماری اتنی صلاحیت ہے اور اگر جنگ ہوئی تو تمام آپشنز پر غور کیا جائے گا اور ان پر فیصلہ لے کر عمل کیا جائے گا۔ہم پر جس ذمہ داری کا بوجھ ڈالا گیا ہے ہم اس سے سرخرو ہو کر نکلیں گے۔ ڈی جیآئی ایس پی آر نے مزید کہا کہ مودی کہتا ہے ثالثی قبول نہیں ہے۔ اگر کشمیر میں صورتحال بہتر نہ ہوئی تو جنگ لازم ہو جائے گی۔ پاکستانی فوج کسی بھی حالت میں جنگ کے لیے تیار ہے۔

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کے خلاف لندن(london) میں احتجاج کیا گیا

پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور(Major Gen asif ghafoor) نے کہا ہے کہ کشمیر کے لیے آخری فوجی اور آخری گولی تک لڑیں گے‘ حملہ ہوا تو بھارت کو سرپرائز دیں گے‘ وزیر اعظم اور آرمی چیف کا آخری حد تک جانے کا بیان فوج کا بیانیہ ہے‘ بھارت آزاد کشمیر کی جانب پیش قدمی تو بھول ہی جائے‘ مودی نے مسئلہ کشمیر کو سرد خانے سے نکال کر پوری دنیا کے لیے فلیش پوائنٹ بنا دیا۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بھارت نے سلامتی کونسل کا اجلاس رکوانے کی سرتوڑ کوشش کی‘ سفارتخانوں میں کشمیر ڈیسک قائم کریں گے‘ مودی نے نہرو کو دفن کردیا‘

نئی دہلی ڈوول ڈاکٹرائن پر عمل پیرا ہے‘بھارت کسی بھی وقت پاکستان کے خلاف جارحیت کر سکتاہے۔ ہفتے کو دفتر خارجہ میں خصوصی کمیٹی برائے کشمیر امور کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور(Major Gen asif ghafoor) نے کہا ہے کہ اگر بھارت نے ہماری سرحدوں کی خلاف ورزی کی تو اسے سرپرائز دیں گے‘

بھارت آزاد کشمیر کی جانب پیش قدمی تو بھول ہی جائے تاہم اب بھارت سے پچھلا قبضہ چھڑوانے کا وقت ہے‘ آزاد کشمیر کا ایک ایک انچ محفوظ ہے‘ نریندر مودی نے کشمیر کے لیے بہت اچھا کام کیا ہے‘

ایک سرد خانے میں پڑے ہوئے مسئلے کو پوری دنیا کے لیے فلیش پوائنٹ بنا دیا ہے‘ قوم تسلی رکھے‘ مسلح افواج کسی بھی صورتحال کا مقابلہ کرنیکے لیے تیار ہیں وہ قوم کو مایوس نہیں کریں گے‘

گزشتہ 3 روز سے ایل او سی پر بھارتی فائرنگ کا بھرپور جواب دیا گیا ہے جبکہ2 روز میں بھارت کے5 فوجی مارے گئے۔ انہوں نے زور دیا کہ پاکستان کی جانب سے موجودہ صورتحال میں سرحد پار کارروائی کشمیر کاز سے غداری ہوگی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں